Services

Untitled Document
Untitled Document

لاہور ، نجی کنسٹرکشن کمپنی کے دفتر میں آتشزدگی کے نتیجے میں 7 افراد جھلس کر جاں بحق ،14 زخمی ، متعدد کی حالت تشویشناک

E-mail Print PDF

لاہور ، نجی کنسٹرکشن کمپنی کے دفتر میں آتشزدگی کے نتیجے میں 7 افراد جھلس کر جاں بحق ،14 زخمی ، متعدد کی حالت تشویشناک
آگ سلنڈر دھماکے سے لگی یا شارٹ سرکٹ سے ، تحقیقات جاری، واقعے کے وقت دفتر میں 30سے 40افراد موجود تھے ،بالائی منزل پر رات کی شفٹ کرنیوالے ملازمین سو رہے تھے، ریسکیو کی 14سے 15گاڑیوں نے تقریباً تین گھنٹوں کی جدوجہد کے بعد آگ پر قابو پالیا
ریسکیو ٹیمیں ایک گھنٹہ تاخیر سے پہنچیں ، دو مزدور اوپر سے کود کر جاں بحق ہوئے ، مزدوروں کی گفتگو /خواجہ احمد حسان اور دیگر حکام کا دورہ
وزیر اعلیٰ پنجاب نے نوٹس لے لیا ، ضلعی انتظامیہ کو واقعے کی مکمل تحقیقات کر کے رپورٹ پیش کرنے کا حکم

لاہور ( این این آئی) محمود بوٹی انٹرچینج کے قریب نجی کنسٹرکشن کمپنی کے دفتر میں خوفناک آتشزدگی کے نتیجے میں 7 افراد جھلس کر جاں بحق جبکہ 14 زخمی ہوگئے جن میں سے متعدد کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے ،ریسکیو کی 14سے 15گاڑیوں نے تقریباً تین گھنٹوں کی جدوجہد کے بعد آگ پر قابو پالیا، وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے تحقیقات کا حکم دیدیا ۔ بتایا گیا ہے کہ محمود بوٹی انٹرچینج کے قریب نجی کنسٹرکشن کمپنی کی تین منزلہ عمارت کے بالائی منزل پر اچانک آگ لگ گئی ۔ واقعے کے وقت دفتر میں 30سے 40افراد موجود تھے ،زیادہ تر افراد عمارت سے نکلنے میں کامیاب ہوگئے تاہم بالائی منزل پر رات کی شفٹ کرنے والے ملازمین سو رہے تھے ۔واقعے کی اطلاع ملتے ہی ریسکیو 1122 کے اہلکار موقع پر پہنچ گئے اور آگ پر قابو پانے کے ساتھ ساتھ عمارت میں موجود افراد کو نکالنے کے لیے کارروائیاں شروع کردیں، آگ کی شدت زیادہ ہونے کے باعث ریسکیو کی مزید گاڑیوں کو طلب کر لیا گیا ۔ ریسکیو ٹیموں نے بھرپور جدوجہد کے بعد تقریبا 3گھنٹوں کے بعد آگ پر قابو پا لیا ۔ریسکیو حکام کے مطابق اہلکارجب دروازہ توڑ کر کمرے میں داخل ہوئے تو وہاں 4افراد دم توڑ چکے تھے جبکہ 10 کی حالت انتہائی خراب تھی۔زخمیوں اور لاشوں کو فوری طور پر ہسپتال پہنچایا گیا جہاں مزید 3زخمی دم توڑ گئے۔طبی عملے کا کہنا ہے کہ واقعے میں مجموعی طور پر 14افراد زخمی ہوئے جن میں سے متعدد کی حالت انتہائی تشویشناک ہے، ان کے جسم 40سے 50فیصد تک جلے ہوئے ہیں۔ ریسکیو ذرائع کے مطابق آ گ پر قابو پانے کے لئے ریسکیو کی 14سے 15گاڑیوں نے حصہ لیا ۔ 5زخمیوں کو شالا مار ہسپتال اور 9کو کوٹ خواجہ سعید ہسپتال منتقل کیا گیا ، کوٹ خواجہ سعید ہسپتال میں دو زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد فراہم کرنے کے بعد ڈسچارج کر دیا گیا جبکہ باقیوں کو تشویشناک حالت کے باعث میو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے ۔ زخمیوں میں اسلم شاہ ، عبدالخالد ، محمد ابرار ، سعود ، کلیم اللہ ناصر ، نعیم ، امجد ، یوسف ، عابد ، رمضان ، نوید ، سمیع الرحمان اور محمد عباس شامل ہیں ۔ ریسکیو حکام کے مطابق جس وقت آگ لگی اس وقت نائٹ شفٹ کرنے والے ملازمین سو رہے تھے ۔ فلور پر 10سے 12سلنڈر موجود تھے اور ان میں سے کچھ پھٹے ہوئے بھی ملے ہیں ہو سکتا ہے کہ ان میں سے کوئی سلنڈر پھٹا ہو جس سے آگ لگی ،اس کے علاوہ واقعہ شارٹ سرکٹ کا نتیجہ بھی ہو سکتا ہے ۔ فلور پر کپڑے کے خیمے بھی موجود تھے جس کی وجہ سے آگ کی شدت بڑھی تاہم ابھی آگ لگنے کی وجوہات بارے کچھ نہیں کہا جا سکتا یہ تحقیقات کے بعد پتہ چلے گی ۔اس موقع پر پولیس حکام بھی بھاری نفری کے ہمراہ موجود تھے ۔ایس پی کینٹ انویسٹی گیشن ندیم عباس کا کہنا ہے کہ واقعہ کی مختلف پہلوں پر تحقیقات جاری ہیں۔ غفلت برتنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی۔جبکہ عمارت میں موجود افراد کے بیانات بھی قلم بند کئے جائیں گے۔ موقع پر موجود انسٹرکشن کمپنی کے مزدوروں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ریسکیو ٹیمیں ایک گھنٹہ تاخیر سے پہنچیں جبکہ دو افراد عمارت سے کود گئے جو جاں بحق ہو گئے ۔ مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما خواجہ احمد حسان نے جائے حادثہ کا دورہ کر کے امدادی کارروائیوں کا جائزہ لیا ۔ انہوں نے کہا کہ واقعے کی تحقیقات جاری ہیں ، کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہو گا ۔ دوسری جانب وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے ضلعی انتظامیہ سے رپورٹ طلب کرلی ہے ۔ وزیر اعلیٰ نے واقعے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر انتہائی رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے ان کے اہل خانہ سے تعزیت کا اظہار کیا ہے ۔ وزیر اعلیٰ شہباز شریف نے حکم دیا ہے کہ واقعے کی مکمل تحقیقات کر کے رپورٹ پیش کی جائے ۔

Image result for breaking news background

 
You are here: Home Pakistan لاہور ، نجی کنسٹرکشن کمپنی کے دفتر میں آتشزدگی کے نتیجے میں 7 افراد جھلس کر جاں بحق ،14 زخمی ، متعدد کی حالت تشویشناک